چھپی ہوئی بھوک


چھپی ہوئی بھوک کیا ہے ؟ چھپی ہوئی بھوک مخصوص غذائی اجزاء کی کمی کو کہتے ہیں ، جس کے نتیجے میں بچوں کی نشوونما بغیر کسی ظاہری علامت کے متاثر ہوتی ہے۔

ہر غذائی جز کے متعلق معلومات کے لیے اس پر کلک کیجئے۔

زنک کی کمی نشوونما ا ور قوتِ مدافعت کو متاثر کرتی ہے۔ اس کی شدید کمی سے نشوونما رک سکتی ہے

(WHO, 2006)

پاکستان میں 50 فیصد بچے زنک کی کمی کا شکار ہیں ( اختر ، 2013)۔

        Reference

*ہور لیکس کی 2 سرونگ فراہم کرتی ہیں

زنک کا 15 فیصد RDA

چھپی ہوئی بھوک


چھپی ہوئی بھوک کیا ہے ؟ چھپی ہوئی بھوک مخصوص غذائی اجزاء کی کمی کو کہتے ہیں ، جس کے نتیجے میں بچوں کی نشوونما بغیر کسی ظاہری علامت کے متاثر ہوتی ہے۔

ہر غذائی جز کے متعلق معلومات کے لیے اس پر کلک کیجئے۔

پاکستان میں بچے وٹامن D کی کمی کے مسئلے کا بھی شکار ہیں ا ور اس کا نتیجہ ہڈیوں ا ور پٹھوں کی کمزوری ہو سکتی ہے۔

پاکستان میں 90 فیصد بچے وٹامن D کی کمی شکار ہیں(2) ۔

        Reference

*ہور لیکس کی 2 سرونگ فراہم کرتی ہیں

وٹامن D کا 50 فیصد RDA

چھپی ہوئی بھوک


چھپی ہوئی بھوک کیا ہے ؟ چھپی ہوئی بھوک مخصوص غذائی اجزاء کی کمی کو کہتے ہیں ، جس کے نتیجے میں بچوں کی نشوونما بغیر کسی ظاہری علامت کے متاثر ہوتی ہے۔

ہر غذائی جز کے متعلق معلومات کے لیے اس پر کلک کیجئے۔

پاکستان میں آئرن کی کمی صحتِ عامہ کا یک اہم مسئلہ ہے۔(3)
آئرن کی کمی کے نتیجے میں بچوں کی نشوونما میں تاخیر ، ذ ہنی توجہ ا ور دھیان میں کمی کے علاوہ  کارکردگی میں کمی بھی(1) ہو سکتی ہے۔   

51 فیصد بچے آئرن کی کمی کا شکار ہیں ۔ (3)

        Reference

*ہور لیکس کی 2 سرونگ فراہم کرتی ہیں

آئرن کا فیصد 100 RDA

چھپی ہوئی بھوک


چھپی ہوئی بھوک کیا ہے ؟ چھپی ہوئی بھوک مخصوص غذائی اجزاء کی کمی کو کہتے ہیں ، جس کے نتیجے میں بچوں کی نشوونما بغیر کسی ظاہری علامت کے متاثر ہوتی ہے۔

ہر غذائی جز کے متعلق معلومات کے لیے اس پر کلک کیجئے۔

وٹامن A آنکھوں کی اچھی صحت ، جسمانی نشوونما ا ور قوتِ مدافعت کے لیے ضروری ہے (1)۔

پاکستان میں اسکول جانے کی عمر سے چھوٹے 50 فیصد بچے وٹامن A کی کمی کا شکار ہیں(4)

        Reference

*ہور لیکس کی 2 سرونگ فراہم کرتی ہیں

وٹامن A کا 50 فیصد RDA

چھپی ہوئی بھوک


چھپی ہوئی بھوک کیا ہے ؟ چھپی ہوئی بھوک مخصوص غذائی اجزاء کی کمی کو کہتے ہیں ، جس کے نتیجے میں بچوں کی نشوونما بغیر کسی ظاہری علامت کے متاثر ہوتی ہے۔

ہر غذائی جز کے متعلق معلومات کے لیے اس پر کلک کیجئے۔

آیوڈین کی کمی بچوں کی ذ ہنی نشوونما کو نقصان پہنچانے کی ایک اہم و جہ ہے (1) -

آزاد جموں و کشمیر ا ور گلگت بلتستا ن میں 60 فیصد بچے آیوڈین کی کمی کا شکار ہیں(4)

        Reference

*ہور لیکس کی 2 سرونگ فراہم کرتی ہیں

آیوڈین کا 50 فیصد RDA

پاکستان میں چھپی ہوئی بھوک کی وجوہات:

9 in 10

10 میں سے 5

بچے روزانہ درکار پروٹین کی ضرورت پوری نہیں کرتے ہیں (1)

1 in 5

10 میں سے 3

 
بچے روزانہ سبزیاں نہیں کھاتے ہیں(3)

1 in 3

10 میں سے 4

بچے روزانہ پھل نہیں کھاتے ہیں(2)

 

Reference

بچوں کی نشوونما کے دوران ماؤں کے لیے 3 مسئلے

غیر موزوں غذاؤں کا انتخاب ، ناکافی نشوونما ا ور وزن کا کم ہونا ، ان مسئلوں میں شامل جو پاکستانی ماؤں کو اپنے بچوں کے حوالے سے درپیش آتے ہیں۔

Obesity

ہفتے میں 1 سے 3 بار تلی ہوئی غذا کھانے والے بچوں کی تعداد

80

فیصد ہے(2)

Stunted Growth

پانچ سال سے کم عمر

41.5

فیصد بچے نا کافی نشوونما کا شکار ہیں(3)

 

underweight

پانچ سال سے کم عمر کے

31.3

فیصد بچے کم وزن ہیں(3)

ہورلیکس کا مزیدار ذائقہ